آج اشک میرے نعت سنائیں تو عجب کیا


آج اشک میرے نعت سنائیں تو عجب کیا
#1
Rose 

Fw4
Fw2


آج اشک میرے نعت سنائیں تو عجب کیا
سن کر وہ مجھے پاس بلائیں تو عجب کیا

دیدار کے قابل تو نہیں چشم تمنا
لیکن وہ کبھی خواب میں آئیں تو عجب کیا

ان پر تو گنہگار کا سب حال کھلا ہے
اس پر بھی وہ دامن میں چھپائیں تو عجب کیا

نہ زاد سفر ہے نہ کوئی کام بھلے ہیں
پھر بھی ہمیں سرکار بلائیں تو عجب کیا

میں ایسا خطاوار ہوں کچھ حد نہیں جس کی
پھر بھی میرے عیبوں کو چھپائیں تو عجب کیا

منہ ڈھانپ کے رکھنا کے گنہگار بہت ہوں
میت میری دیکھنے آئیں تو عجب کیا

نہ زاد سفر ہے نہ کوئی کام بھلے ہیں
پھر بھی ہمیں سرکار بلائیں تو عجب کیا

وہ حسن دوعالم ہیں ادیب ان کے قدم سے
صحرا میں اگر پھول کھلائیں تو عجب کیا

[Image: gunahgar.gif]
Reply

Possibly Related Threads...
Thread / Author Replies Views Last Post
Last Post by UMER
24-11-2017, 06:45 PM
Last Post by UMER
24-11-2017, 06:31 PM
Last Post by UMER
24-11-2017, 06:29 PM



Users browsing this thread: 1 Guest(s)